موجودہ عدم استحکام 2016 کے ڈان لیکس سے شروع ہوا: وزیر اطلاعات

وزیر اطلاعات

پاکستان کے وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے کہا ہے کہ ملک میں

موجودہ عدم استحکام 2016 کے ڈان لیکس سے شروع ہوا جو آج پی ڈی ایم کے جلسوں میں تقاریر کے ذریعے بڑھایا جا رہا ہے۔

سنیچر کو اسلام آباد کے پریس انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ ‘کوئٹہ جلسے میں آزاد بلوچستان کا نعرہ لگایا گیا اور بات یہاں ختم نہ ہوئی بلکہ اس کے بعد قومی اسمبلی میں ایاز صادق نے تقریر کی جس سے ملک بھر میں غصہ پھیلا۔

انہوں نے کہا کہ ملک کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کے لیے ایک بیانیہ بنایا جا رہا ہے اور اپوزیشن جماعتوں میں شامل بعض رہنماؤں کو بھی اس بیانیے پر تحفظات ہیں مگر وہ مجبوری کے باعث خاموش ہیں۔’

Related Posts